کیسے کریں: Linux پر کوائف کا محفوظ اخراج

ہم میں سے اکثر یہ سمجھتے ہیں کہ اپنے کمپیوٹر پر ایک فائل حذف ہوجاتی ہے جب ایک بار ہم اپنے کمپیوٹر کے ٹریش فولڈر میں فائل ڈالتے ہیں اور ٹریش و خالی کرتے ہیں؛ در حقیقت، فائل حذف کرنا اسے مکمل طور پر نہیں مٹاتا۔ جب کوئی ایسا کرتا ہے تو کمپیوٹر محض صارف سے فائل کو اوجھل کر دیتا ہے اور ڈسک کے حصے پر نشان لگاتا ہے کہ فائل ’’دستیابی‘‘ کے طور پر محفوظ ہوگئی تھی، مطلب یہ کہ آپکا آپریٹنگ سسٹم اب نئے کوائف کیساتھ فائل پر تحریر کر سکتا ہے۔ بہر کیف، ہفتوں ، مہینوں، حتٰی کہ سالوں پہلے ہوسکتا ہے کہ فائل ایک نئی فائل کیساتھ مزید تحریر کی جاتی ہو۔ جب تک ایسا نہیں ہوتا، وہ ’’حذف شدہ‘‘ فائل آپکی ڈسک پر موجود رہتی ہے؛ یہ محض عام آپریشنوں سے اوجھل ہے۔ اور تھوڑے سی محنت اور صحیح آلات (جیسا کہ ’’غیر حذف‘‘ سافٹ ویئر یا فورینزک طریقوں سے)، آپ ’’حذف شدہ‘‘ فائل دوبارہ حاصل کر سکتے ہیں۔ لبِ لباب یہ ہے کہ عام طور پر کمپیوٹر فائلیں ’’ حذف‘‘ نہیں کرتے؛ وہ صرف خالی جگہ فراہم کرتے ہیں وہ فائلیں مستقبل میں کچھ وقت کسی چیز کے ذریعے زیادہ لکھنے کیلئے اٹھا لیتی ہیں۔

ایک فائل ہمیشہ کیلئے حذف کرنے کا بہترین راستہ اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ یہ فوراً مزید تحریر لے لیتی ہے، اس طرح جو وہاں لکھا جاتا تھا اسے دوبارہ حاصل کرنے کو وہ مشکل بناتی ہے۔ یقینی طور پر آپ کا آپریٹنگ نظام پہلے سے ایک سافٹ ویئر رکھتا ہے جو آپ کیلئے ایسا کرسکتا ہے¬¬، ایسا سافٹ ویئر جو آپکی ڈسک پر تمام ’’خالی‘‘ جگہ بے معنی باتوں کیساتھ مزید تحریر کر سکتا ہے اور یوں حذف شدہ کوائف کی رازداری بچاتا ہے۔

نوٹ کریں کہ حفاظتی طریقے سے سالڈ سٹیٹ ڈرائیوز (ایس۔ایس۔ڈیز)، یو۔ایس۔بی فلیش ڈرائیوز، اور ایس۔ڈی کارڈوں سے کوائف حذف کرنا بہت مشکل ہے! نیچے دی گئی ہدایات محض روائتی ڈسک ڈرائیوز پر لاگو ہوتی ہیں، اور جدید لیپ ٹاپس میں معیاری بن رہی ہیں ، یو۔ایس۔بی کلیدیں اور یو۔ایس۔بی تھمب ڈرائیوز، یا ایس۔ڈی کارڈز اور فلیش میموری کارڈز ان پر لاگو نہیں ہوتیں۔

ویئر لیولنگکہا جاتا ہے۔ ( آپ اس بارے میں مزید یہاں پڑھ سکتے ہیں کہ حفاظتی اخراج کیلئے یہ مسائل کیوں پیدا کرتا ہیے۔)

اگر آپ ایک ایس۔ایس۔ڈی یا ایک یو۔ایس۔بی فلیش ڈرائیو استعمال کررہے ہیں تو نیچے نیچے دیئے گئے حصے میں کود سکتے ہیں۔

لینکس پر، حالیہ طور پر ہم بلیچ بِٹ استعمال کرنے کا مشورہ دیتے ہیں۔ یہ ونڈوز اور لینکس کیلئے ایک مفت، کھلی رسائی والا محفوظ اخراج کا آلہ ہے، اور پہلے سے موجود Cipher.exe. گھاگ ہےسے کہیں زیادہ

بلیچ بِٹ انفرادی فائلوں کو محفوظ اخراج کیلئے جلد اور آسان نشانہ بنانے میں یا معیادی محفوظ اخراج حکمتِ عملیاں لاگو کرنے میں استعمال ہوسکتا ہے۔ رسمی فائل اخراج ہدایات لکھنے میں بھی یہ ممکن ہے۔ ازراہِ کرم دستاویز کاریکا مزید معلومات کیلئے جائزہ لیں

بلیچ بِٹ کی تنصیب کرنا Anchor link

Ubuntu Software Center کیساتھ تنصیب کرنا

آپ Ubuntu Software Center استعمال کرکے Ubuntu Linux پر BleachBit حاصل کرسکتے ہیں۔ اوپر بائیں مینو میں ایپلی کیشن بٹن پر کلک کریں اور تلاش کریں کی جگہ استعمال کریں۔

تلاش کرنے کی جگہ میں ’’سافٹ ویئر‘‘ تحریر کریں اور Ubuntu Software آئیکن پر کلک کریں۔

آپ BleachBit دیکھنے کیلئے Ubuntu Software Center کے ذریعے براؤز کر سکتے ہیں لیکن سرچنگ ذرا تیز ہے۔ تلاش کرنے کی جگہ استعمال کریں۔

BleachBit تلاش کرنے کی جگہ میں داخل کریں اور داخل کرنا کو دبائیے نتیجتاً BleachBit ظاہر ہو جائے گا۔

BleachBit پر کلک کریں اور تنصیب کرنا بٹن دبائیں۔

Ubuntu Software Center آپ سے شناختی لفظ کیلئے اجازت مانگے گا۔ اپنا شناختی لفظ داخل کریں اور تصدیق کرنا کے بٹن پر کلک کریں

Ubuntu Software Center بلیچ بِٹ تنصیب کر دے گا اور ایک چھوٹا سا آگے بڑھنے کا خانہ کھولے گا۔ جب تنصیب مکمل ہو جائے گی تو آپ ایک مٹانا بٹن دیکھیں گے۔

ٹرمینل سے تنصیب Anchor link

آپ ٹرمینل استعمال کرکے Ubuntu Linux پر BleachBit حاصل کر سکتے ہیں۔ Application بٹن پر کلک کریں اوپر والے بائیں فہرست میں اور تلاش کریں۔ 

“sudo apt-get install bleachbit” تحریر کریں اور Enter دبائیں۔

آپ سے تصدیق کیلئے آپکا شناختی لفظ پوچھا جاتا ہے کہ آپ BleachBit کی تنصیب چاہتے ہیں۔ اپنا شناختی لفظ داخل کریں اور Enter دبائیں۔

اب آپ BleachBit کی تنصیب کو آگے بڑھتا دیکھیں گے اور جب یہ مکمل ہوجائے تو آپ کو کمانڈ لائن پر واپس آجانا چاہئے جہاں سے آپ پنے شروع کیا تھا۔

سائیڈ بار میں BleachBit شامل کرنا Anchor link

Application بٹن پر کلک کریں اوپر بائیں فہرست میں اور تلاش کرنے کی جگہ استعمال کریں۔

تلاش کرنے کی جگہ میں “bleach” تحریر کریں اور دو آپشنز ظاہر ہوں گے۔ BleachBit اور BleachBit (as root). BleachBit (as root) اختیار استعمال ہونا چاہئے اگر آپ جانتے ہیں کہ آپ کیا کر رہے ہیں اور اگر آپ آپریٹنگ سسٹم کی جانب سے مطلوب فائلیں خارج کرنے میں اسے استعمال کرتے ہیں تو یہ ناقابلِ تلافی نْصان کر سکتا ہے۔

BleachBit پر Right-click کریں اور “Add to Favorites.” منتخب کریں۔

BleachBit استعمال کرنا Anchor link

Application button پر کلک کریں اوپر بائیں فہرست میں اور BleachBit پر کلک کریں favorites سے۔

مرکزی BleachBit window کھل جائے گی۔

اول BleachBit ہمیں ترجیحات کا مجموعی جائزہ دیتا ہے. ہم “Overwrite files to hide contents” اختیار چیک کرنے کی سفارش کرتے ہیں۔

Close بٹن پر کلک کریں۔

BleachBit متعدد تنصیب کردہ بروگرام کا سراغ لگائے گا اور ہر پروگرام کیلئے خصوصی اختیار دکھائے گا۔ BleachBit پہلے سے مرتب چار ترتیبات کیساتھ آتا ہے۔

ترتیبات استعمال کرنا۔

بعض سافٹ ویئر ریکارڈوں کو پیچھے چھوڑ دیتے ہیں کہ وہ کب اور کہاں استعمال ہوئے تھے۔ دو اہم مثالیں جو محض یہ وسیع پھیلاؤ والے مسئلہ کو بیان کرتی ہیں، وہ ہیں حالیہ مسودات اور ویب براؤزر ہسٹری۔ جو سافٹ ویئر حالیہ مرتب شدہ مسودات کا سراغ لگاتا ہے ان فائلوں کے ناموں کا ایک ریکارڈ چھوڑ دیتا جن کیساتھ آپ نے کام کیا ہو، اگرچہ وہ فائلیں خود خارج کر دی گئی ہیں۔ اور ویب براؤزرز صفحات اور تصاویر کی کیچڈ نقول بھی رکھتے ہیں ان سائٹس سے تیزی سے لوڈ کرنے کیلئے آپ اگلی دفعہ آئیں

Bleachbit "presets" فراہم کرتا ہے جو آپ کیلئے ان میں سے چند ریکارڈ ختم کر سکتا ہے، بلیچ بِٹ مصنف کی تحقیق کی بنیاد پر ّپ کے کمپیوٹر پر رکارڈوں کی جگہ سے متعلق جو آپکی سابقہ کارروائی افشا کرنا چاہتی ہے۔ ہم ان ترتیبات میں سے صرف دو کے استعمال پر بات کریں گے تاکہ آپ یہ اندازہ لگا سکیں کہ وہ کیسے کام کرتے ہیں۔

Systemسے اگلا باکس چیک کریں. اس بات کا نوٹس لیں کہ یہSystem کی قسم کے تحت تمام چیک باکس پر نشان لگاتا ہے. System box ان چیک کریں اور مندرجہ ذیل باکس پر چیک کریں: Recent document list اور Trash. Clean بٹن کلک کریں.

BleachBit آپکو تصدیق کیلئے نہیں کہے گا۔ Delete پر کلک کریں۔

BleachBit اب متعدد فائلیں صاف کر دے گا اور آپ کو آگے بڑھنے کیلئے دکھائے گا۔

محفوظ طریقے سے ایک فولڈر کا اخراج

File menu پر کلک کریں اور Shred Folders منتخب کریں.

ایک چھوٹی سی ونڈو کھل جائے گی۔ جس فولڈر کو آپ شریڈ کرنا چاہرے ہیں اس کا انتخاب کریں۔

BleachBit آپ سے پوچھے گا کہ جو فائلیں آپ نے منتخب کی ہیں ان کا ہمیشہ کیلئے اخراج چاھتے ہیں۔ Delete بٹن پر کلک کریں۔

BleachBit اب آپکو اخراج شدہ فائلیں دکھائے گا۔ نوٹس لیں کہ BleachBit نے فولڈر میں ہر فائل کو محفوظ طریقے سے خارج کر دیا ہے، پھر محفوظ طریقے سے فولڈر کو خارج کردیں۔

ایک فائل کا محفوظ طریقے سے اخراج

File فہرست پر کلک کریں اور Shred Files منتخب کریں۔.

ایک فائل منتخب کرنے کی ونڈو کھلے گی۔ جو فائلیں آپ اڑانا چاہتے ہیں ان کا انتخاب کریں۔

BleachBit آپ سے تصدیق کا پوچھا گا آیا جو فائلیں آپ نے منتخب کی ہیں ان کا ہمیشہ کیلئے اخراج چاہتے ہیں۔ Delete بٹن پر کلک کریں۔

محفوظ اخراجی آلات کی حدود سے متعلق ایک تنبیہ Anchor link

اول، یاد رکھیں کہ اوپر دیا گیا مشورہ آپ کا استعمال ہونے والے کمپیوٹر کی ڈسک پر فائلیں حذف کرتا ہے۔ اوپر دیئے گئے آلات میں سے کوئی بھی بیک اپس حذف نہیں کرے گا جو آپکے کمپیوٹر، کسی اور ڈسک یا یو۔ایس۔بی ڈرائیو، ایک ’’ٹائم مشین‘‘، ایک ای۔میل سرور، یا کلاؤڈ میں کسی اور جگہ سے بنے ہوئے تھے۔ ایک فائل محفوظ طریقے سے حذف کرنے کیلئے آپ اس فائل کی ہر نقل ہر اس جگہ سے حذف کریں جہاں وہ محفوظ یا بھیجی گئی تھی۔۔ مزید برآں، ایک بار ف ئل کلاؤڈ میں محفوظ ہو جاتی ہے ( مثلاً: ڈراپ باکس یا بعض دیگر فائل بانٹنے کی خدمت کے ذریعے ) تو عام طور پر اس فائل کے ہمیشہ کیلئے اخراج کی کوئی ضمانت نہیں ہوتی۔

بد قسمتی سے، محفوظ اخراجی آلات کی ایک اور حد بھی ہے۔ اگرچہ آپ اوپر دیئے گئے مشورے پر عمل کرتے ہیں اور ایک فائل کی تمام نقول حذف کر چکے ہیں، لیکن ایک وجہ ایسی ہے جس سے آپکے کمپیوٹر پر حذف شدہ فائلوں کے متعدد نشان باقی رہ سکتے ہیں، اس لئے نہیں کہ فائلیں خود سے مکمل طور حذف نہیں ہوئیں، بلکہ اس لئے کہ آپریٹنگ سسٹم کا کچھ حصہ یا کوئی اور پروگرام ان فائلوں کا ایک دانستہ ریکارڈ رکھتا ہے۔

ایسے بہت سے راستے ہیں جن میں ایسا ہو سکتا ہے، لیکن دو مثالیں امکان منتقل کرنے میں کافی ہونی چاہئیں۔ ونڈوز یا میک او۔ایس۔ایکس پر، مائیکروسافٹ آفس کی ایک نقل ’’موجودہ مسودات‘‘ کی فہرست میں ایک فائل کے نام سے ایک حوالہ برقرار رکھ سکتی ہے، اگرچہ فائل حذف کردی گئی ہے ( آفس کبھی کبھار فائل کے مواد عارضی فائلیں رکھے والی جگہ پر بھی رکھ سکتا ہے)۔ ایک لینکس یا دوسرے نکس نظام پر، کھلا آفس مائیکرو سافٹ آفس کی طرح بہت سے ریکارڈوں کے طور پر رکھ سکتا ہے، اور ایک صارف کی شیل تاریخ احکامات کی حامل فائل ہو سکتی ہے جو فائل کے نام پر مشتمل ہوتی ہے، اگرچہ فائل محفوظ طریقے سے حذف کردی گئی ہے۔ زیرِ عمل ایسے درجنوں پروگرام ہوسکتے ہیں جو ایسا سلوک کرتے ہیں۔

اس مسئلے کا حل جاننا بہت مشکل ہے۔ یہ قیاس کرنا قرینِ مصلحت ہے کہ اگرچہ ایک فائل محفوظ طریقے سے حذف کر دی گئی ہے، لیکن اس کا نام یقینی طور پر آپکے کمپیوٹر پر کچھ وقت کیلئے باقی رہ سکتا ہے۔ مکمل ڈسک مزید تحریر کرنا ہی نام کے ختم ہونے کی ۱۰۰ فیصد یقینی ہونے کا ایک راستہ ہے۔ آپ میں سے بعض یہ سوچ کر حیران ہو رہے ہوں گے، ’’ کیا میں بیکار کوائف ڈسک پر دیکھنے کیلئے تلاش کر سکتا ہوں اگر کسی جگہ کوائف کی کوئی نقول موجود ہیں؟‘‘۔ جواب ہاں اور ناں دونوں میں ہے۔ ڈسک میں تلاش کرنا (مثلاً، لینکس پر grep -ab /dev/اس طرح کی ایک کمانڈ استعمال کرکے) آپ کو بتائے گا اگر کوائف سادہ متن میں موجود ہے، لیکن اگر کوئی پروگرام کمپریس ہوچکا ہےیا دوسری صورت میں اس کے حوالے خفیہ ہو چکے ہیں تو یہ آپ کو نہیں بتائے گا۔ اس بارے میں بھی محتاط رہیں کہ تلاش خود سے کوئی ریکارڈ نہیں چھوڑتی! یہ امکان بہت کم ہے کہ فائل کے مواد باقی رہ سکتے ہیں، لیکن یہ نا ممکن نہیں۔ مکمل ڈسک مزید تحریر کرنا اور ایک تازہ آپریٹنگ سسٹم نصب کرنا اس بات کو ۱۰۰ فیصد یقینی بنا سکتا ہے کہ ایک فائل کے ریکارڈ مٹائے جا چکے ہیں۔

پرانا ہارڈویئر مسترد کرتے ہوئے محفوظ اخراج کرنا Anchor link

اگر آپ آخرکار ہارڈویئر کا ایک حصہ پھینکنا یا ای۔بے پر فروخت کرنا چاہتے ہیں تو آپ کو یقین دہانے کرنی پڑے گی کہ کوئی اس میں سے آپ کے کوائف دوبارہ حاصل نہیں کر سکتا۔ مطالعے بارہا دریافت کر چکےہیں کہ کمپیوٹر مالکان عام طور پر ایسا کرنے سے ناکام ہوتے ہیں، ہارڈ ڈرائیوز دوبارہ پیوست کرکے بیچی جاتی ہیں جو بہت زیادہ حساس معلومات کی بھری ہوتی ہیں۔ لہٰذا، ایک کمپیوٹر بیچنے یا دوبارہ کارآمد بنانے سے پہلے اس کے ذخیرہ کار ابلاغ پہلے بیکار باتوں کیساتھ مزید تحریر کرنے کو یقینی بنائیں۔ اور اگرچہ آپ ابھی اس سے پیچھا نہیں چھڑا رہے، اگر آپ کے پاس ایک ایسا کمپیوٹر ہے جو اپنی معیاد پوری کر چکا ہے اور مزید زیرِ استعمال نہیں ہے تو حفاظتی تدبیر کے تحت مشین کو کسی کونے یا الماری میں پھینکنے سے پہلےہارڈ ڈرائیو صاف کر دیں۔ Darik's Boot and Nuke اس مقصد کیلئے ایک تیار کردہ آلہ ہے، اور ویب کے گرد اس کے استعمال سے متعلق یہاں مختلف اسباق موجود ہیں، (بشمول یہاں

مستقل طور پر ناقابلِ فہم ایک ہارڈ ڈرائیو کے مرموز مواد خدمت انجام دیتے ہوئے بعض مکمل ڈسک خفیہ کاری سافٹ ویئر ماسٹر کلید تباہ کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ چونکہ کلید کوائف کی ایک چھوٹی سی مقدار ہے اور تقریباً فی الفور تباہ ہو سکتی ہے، یہ ڈیرک کے بوٹ اور نیوک جیسے سافٹ ویئر کیساتھ مزید لکھنے سے ایک مزید تیز متبادل کی ترجمانی کرتا ہے، جو بڑے آلات کیلئے کافی وقت ضائع کرنے والا ہو سکتا ہے۔ تاہم، یہ طریقہ کار محض معقول ہے اگر ہارڈ ڈرائیو ہمیشہ مرموز تھی۔ اگر آپ وقت سے پہلے مکمل ڈسک خفیہ کاری استعمال نہیں کر رہے تھے تو آپ کو ہارڈ ڈرائیو سے جان چھڑانے سے قبل پوری ڈرائیو مزید تحریر کرنے کی ضرورت ہو گی۔

سی۔ڈی رومز کا اخراج Anchor link

جب سی۔ڈی رومز کی بات آتی ہے تو آپ کو وہی کرنا چاہئے جو آپ کاغذ کیساتھ کرتے ہیں، یعنی انہیں۔ پرزہ پرزہ کر دیںایسے کم لاگت آلات ہیں جو سی۔ڈٰی رومز چبا ڈالیں گے۔ محض ایک سی۔ڈی روم کوڑے میں نہ پھینکیں جب تک آپ یقین نہیں کر لیتے کہ اس میں کوئی حساس چیز باقی نہیں۔

سالڈ سٹیٹ ڈسکوں (ایس۔ایس۔ڈیز) یو۔ایس۔بی فلیش ڈرائیوز، اور ایس۔ڈی کارڈوں پر محفوظ اخراج Anchor link

بدقسمتی سے ایس۔ایس۔ڈیز، یو۔ایس۔بی فلیش ڈرائیوز، اور ایس۔ڈی کارڈوں کے طریقہ عمل کی وجہ سے محفوظ طور پر دونوں انفرادی فائلیں اور خالی جگہ حذف کرنا، اگر نا ممکن نہیں تو مشکل ضرور ہے۔ نتیجتاً خفیہ کاری کا استعمال حفاظت کی اصطلاح میں آپ کا بہترین طرزِ عمل ہے، اگرچہ فائل ڈسک پر موجود ہو گی لیکن وہ کم از کم اس شخص کو بیکار دکھائی دے گی جو اسے اپنے قابو میں کر لیتا ہے اور وہ آپ کو اس فائل کی خفیہ کشائی کیلئے مجبور نہیں کر سکتا۔ حال حاضر میں، ہم ایک اچھا عام طریقہ پیش نہیں کر سکتے جو یقیناً ایک ایس۔ایس۔ڈی سے آپکے کوائف مٹا دے گا۔ اگر آپ جاننا چاہتے ہیں کہ کوائف حذف کرنا اتنا مشکل کیوں ہے، تو آگے پڑھئے۔

جیسا کہ ہم نے اوپر بیان کیا کہ ایس۔ایس۔ڈیز اور یو۔ایس۔بی فلیش ڈرائیوز ایک تکنیک کا استعمال کرتی ہیں جسے ویئر لیولنگ کہا جاتا ہے۔ بڑے پیمانے پر، ویئر لیولنگ مندرجہ ذیل کام کرتا ہے۔ ہر ڈسک پر خالی جگہ بلاکس میں تقسیم ہوتی ہے، جس طرح ایک کتاب میں صفحات ہوتے ہیں۔ جب ایک فائل ڈسک کو لکھی جاتی ہے، یہ متعدد بلاک یا بلاکس کی ترتیبات (صفحات) کے سپرد کر دئیے جاتے ہیں۔ لیکن ایس۔ایس۔ڈیز اور یو۔ایس۔بی فلیش ڈرائیوز میں، بارہا مٹانے اور لکھنے سے بلاکس اسے بیکار کر سکتے ہیں۔ ہر بلاک محدود بار برہا لکھا اور مٹایا جا سکتا ہے قبل اس کے کہ وہ بلاک مزید کام کرنا چھوڑ دے ( یہ بالکل کاغذ اور پینسل کی طرح ہے کہ بالآخر کاغذ پر بار بار لکھنے اور مٹانے سے کاغذ بیکار ہوجاتا ہے)۔ اس کے سدِ باب کیلئے ایس۔ایس۔ڈیز اور یو۔ایس۔بی ڈرائیوز اس بات کو یقینی بنانے کی کوشش کریں گے کہ ہر بلاک کو مٹانے اور دوبارہ لکھنے کی تعداد ایک جیسی ہو، تاکہ ڈرائیو لمبے عرصے تک چلے (ویئر لیولنگ کی طرز پر)۔ ضمنی اثرات کے طور پر، کبھی کبھار بلاک مٹانے اور لکھنے کی بجائے ایک فائل حقیقنت میں ذخیرہ ہوجاتی تھی، ڈرائیو اس بلاک کو اکیلا چھوڑنے کی بجائے بے اثر ہونے کے طور پر نشان لگادے گی، اور ایک مختلف بلاک سے اختیار کی ہوئی فائل لکھ دے گی۔ ایک مختلف صفحے پر اختیاری فائل لکھنا، اور پھر نئے صفحے سے محض کتاب کے مندرجات کی تفصیل کی تجدید کرنا، غیر تبدیل شدہ کتاب میں صفحہ چھوڑنے کی طرح ہے۔ یہ سب ڈسک کی برقیات میں ایک بہت چھوٹے پیمانے پر ہوتا ہے، لہٰذا آپریٹنگ سسٹم یہ سب کچھ ہونے کو کچھ بھی نہیں گردانتا۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ اگرچہ آپ ایک فائل مزید لکھنے کی کوشش کرتے ہیں، تاہم، اس بات کی کوئی ضمانت نہیں ہوتی کہ ڈرائیو اسے حقیقی طور پر مزید لکھے گی، یہی وجہ ہے کہ ایس۔ایس۔ڈٰیز کیساتھ محٖفوظ اخراج کیوں اتنا کٹھن ہوتا ہے۔

آخری تازہ کاری: 
2015-03-06
اس صفحے کا ترجمہ انگریزی زبان سے کیا گیا ہے، انگریزی ورژن میں شاید تجدید ہوچکی ہو۔
JavaScript license information